یہ دنیا جس کو کہتے ھیں


یہ دنیا جس کو کہتے ھیں

یہاں  ہر رنگ ہوتے ھیں

کبھی تم خود کو پاؤ گے

کہ تم وہ فرد واحد ہو

وہ  جس کا ظرف اعلی  ہے

کھبی تم خود کو  پاؤ گے

کہ تم تو اک نعمت ہو

نہ جانے پھر یہ سب کیا ہے

یہ  آنکھوں میں نمی جو ہے

یہ رستے اجنبی جو ھیںر

کہیں منزل نہیں دکھتی

وہ جو کل تک  تھی اک امید

دکھائی پھر نھیں دیتی

بس اک پھر ہمسفر پایا

وہی جو صبرو تحمل ہے

جو اپنے ساتھ رہتا ہے

ازل سے ہے ابد تک وہ

یھی بس اک سہارا ہے

جسے ہم ساتھ رکھتے ھیں

جسے ھم روز گنتے ھیں

یہ دنیا جس کو کہتے ھیں

یہاں ہر رنگ ہوتے ھیں

Advertisements

Comments Off on یہ دنیا جس کو کہتے ھیں

Filed under Uncategorized

Comments are closed.